40

صوبے کے بڑے تدریسی ہسپتال مردان میڈیکل کمپلیکس کی استمعال شدہ سرنجیں ۔ڈریپس۔انجکشن ۔وائلز۔ڈائیلاسس کٹس اوردیگر سامان قانون کے مطابق تلف کرنے کی بجائے کباڑ خانوں میں فروخت کیئے جانے کا انکشاف ۔

صوبے کے بڑے تدریسی ہسپتال مردان میڈیکل کمپلیکس کی استمعال شدہ سرنجیں ۔ڈریپس۔انجکشن ۔وائلز۔ڈائیلاسس کٹس اوردیگر سامان قانون کے مطابق تلف کرنے کی بجائے کباڑ خانوں میں فروخت کیئے جانے کا انکشاف

فیاض خان آفریدی نمائندہ انقلاب نیوز مردان

مردان میڈیکل کپملیکس ہسپتال میں جو ڈریپس سرنجیں انجکشن اور دیگر سامان جو استمعال کیا جاتاہے اسے استمعال کے بعد قانون اور ضابط کے مطابق تلف کیاجاتاہے تاکہ وہ دوبارہ استمعال کے قابل نہ رہ سکے کونکہ اس کی دوبارہ استمعال سے محتلف موضی امراض لاحق ھونے کا خطرہ ہوتاہے مگر ہسپتال کی انتظامیہ اور کلاس فور ملازمین کی ملی بھگت سے ہسپتال میں استمال شدہ سامان کباڑ خانوں میں فروخت کیاجاتاہے۔

اپنی رائے دیں

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں