tharparkar district council budget 21

تھرپارکر ضلع کونسل کا سال2019-20  کے لئے 5لاکھ 74ہزار 124روپے کی بچت اور ٹیکس فری بجٹ متفق راء سے منظور ۔

مریم صدیقہ نیوز ڈائیریکٹر انقلاب نیوز حیدرآباد

تفصیلات کے مطابق ضلع کاؤنسل تھرپارکر کا بجٹ اجلاس  چیئرمیں ڈاکٹر غلام حیدر سمیجو کی زیر صدارت شہید بینظیر بھٹو کلچرل کامپلیکس مٹھی میں منعقد ہوا۔ جس میں ضلع کاؤنسل کی آمدنی کا تخمینہ 70 کروڑ 33 لاکھ 95ہزار 248روپے اور ٹوٹل خرچوں کا تخمینہ 70 کروڑ 28 لاکھ 21ہزار 124روپے لگایا گیا۔ جبکہ ترقیاتی کاموں کے لئے 55 کروڑ 68لاکھ 14ہزار روپے مختص کئے گئے ہیں ،

tharparkar district council budget

جس میں سے جاری ترقیاتی اسکیموں کے لئے 11کروڑ 38لاکھ 50ہزار اور نئی اسکیموں کے لئے 44 کروڑ 29 لاکھ 64 ہزار روپے مختص کئے گئے، قدرتی آفتوں سے نمٹنے کے لئے 30لاکھ، ملازمین کی تنخواہوں کی مد میں 9 کروڑ 19 لاکھ 895 روپے، پنشن کے لئے 95 لاکھ 9 ہزار 229 روپے، گریجویٹی کے لئے 70لاکھ، متفرقہ اخراجات کے لئے 2 کروڑ 84 لاکھ 8ہزار روپے، مالی مدد کے لئے 20 لاکھ روپے، ملازمین کے بچوں کی تعلیم اور اسکالر شپ کے لئے 5 لاکھ روپے، خصوصی گرانٹ جس میں بار کاؤنسل، مدرسہ، مندر اور غریبوں کی مدد کے لیے صرف ایک ایک لاکھ مختص کئے گئے ہیں اور چارج ایکسپنڈیچر  گورنمنٹ اخراجات کے لئے 2 لاکھ 80روپے مختص کئے گئے ہیں۔

ضلع چیئرمین ڈاکٹر غلام حیدر سمیجو نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس سال نیا کوئی ٹیکس نہیں لگایا گیا ہے یہ بجٹ ٹیکس فری بجٹ ہے جو تھر کی عوام کے لئے فائدہ مند ثابت ہوگی۔ انہوں نے گزشتہ سال کی کارکردگی بیان کرتے ہوئے کہا کہ ملازمیں کے واجبات کی ادائیگی کے ساتھ ساتھ مختلف دیہات کا سروے کرکے ضلع کاؤنسل کے ممبران کے تعاون سے تھرپارکر میں 45 کروڑ کے ریکارڈ ترقیاتی کام کروائے ہیں، جس میں خاص طور پر تھر میں پانی کے مسائل تھے جس کو مد نظر رکھتے ہوئے پانی اسکیمیں لگانے کو ترجیح بنیادوں پر مکمل کیا گیا جس سے تھر میں پانی کے مسائل کافی حد تک حل ہوگئے ہیں،اس کے علاوہ نگرپارکر میں ریسٹ ہاؤس تعمیر کیا گیا ہے اس سے نگرپارکر آنے والے سیاحوں کو سہولیات کے ساتھ ساتھ ضلع کاؤنسل کو بھی آمدنی حاصل ہوگی اور بارشوں کے موسم میں سیاحت کو بھی فروغ ملے گا،

تھرپارکر میں گذشتہ سال کے لگائی گئی سیکڑوں ثمر پمپ غیر معیاری مٹیریل سے لگائے گئے جو بھی خراب اور ایک دن بھی فراہم نہیں کرسکے ہیں،جبکہ ضلع بھر آگ کے واقعات بھی معمول بن چکے ہیں مگر پہلے سے مختص بجٹ بھی آگ متاثرین کو نہیں دی گئی۔تھرپارکر میں غربت اور سماجی مسائل سے شکار لوگ روزانہ خودکشی کرتے ہیں مگر بجٹ میں غریبوں کی مدد کے لیے صرف ایک لاکھ روپئے مختص کیے جانا بھی حیرت کی بات ہے۔ اجلاس میں وائس چیئرمین کرنی سنگھ سمیت ضلع کاؤنسل میمبراں نے شرکت کی۔

اپنی رائے دیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں