nawaz sharif press conference 20

سابق نااہل وزیر اعظم نوازشریف کا ہمسایہ ملک کو خوش کرنے کا طریقہ

سابق نااہل وزیر اعظم نوازشریف کا ہمسایہ ملک کو خوش کرنے کا طریقہ

تحریر: رانا عاشق علی تبسم

نوازشریف پر اگر ثابت ہوجاتا ہے کہ اس نے جس ملک کا تین بار وزیراعظم رہ چکا ہے وہ بیان دیتا ہے کہ بھارت میں دھشت گردی پاکستان کروا رہا ہے اور پھر ڈان لیکس کے پیچھے بھی نوازشریف کا ہاتھ ہے تو یہ ملک دشمن عناصر کی ترجمانی کے مترادف ہے ۔ انڈیا کی اس خبر سے واضح ہے کہ نوازشریف بھارت کی درینہ دوستی کے بغیر نہیں چل سکتا انڈیا کے دہشت کلبھوہن کی گرفتاری جو پاکستان میں بڑے پیمانے پر دہشتگردی کرنے کے مذموم ارادوں کے لئے مخصوص کیا گیا تھا جسے ہماری عسکری قیادت نے اپنی صلاحیتوں کو بروئے قرار لاکر گرفتار کیا اتناعرصہ ہوگیا نوازشریف نے کلبھوہن دہشتگرد کے خلاف عملی اقدام تو دور کی بات اسکے متعلق اسکے پر کوئی مذمتی الفاظ تک نہیں ادا کیئے تھے جس کا پول کھل چکا ہے نوازشریف بذات خود بھارت کی ملی بھگت سے سب کام سرانجام دے رہے تھے ۔ نوازشریف صاحب کرپشن تو پہلے ہی جھکڑے ہوئے ہیں مگر یہ نوازشریف کے لئے اس کے اصل جرم سے قدرے کم ہے ۔ نوازشریف نے پاکستان کے بارے غداری کے مرتکب ہوئے ہیں جو عرصہ دراز سے مودی کی شکل میں مختلف طریقہ کار سے اپنے مشن کو جاری رکھے ہوئے تھے اور بظاہر عوامی لیڈر کا کا کردار ادا کررہے تھے۔ نوازشریف اس وقت پاکستان کے ساتھ غداری کرنے کے مرتکب ہوئے ہیں عدلیہ اور بالخصوص جن لوگوں نے اس ملک کی اندرونی بیرونی حفاظت کرنے کی قسم کھاکر اس ملک کا بیڑہ اٹھایا ہوا ہے وہ فوری ایک ایکشن میں آئیں اور نوازشریف کو پاکستان کے ساٹھ غداری کے ضمرے میں فوری گرفتار کریں اور کسی بھی ملک ن شہری اپنے ملک کے ساتھ غداری کرنے کا مرتکب ہو اور اسکا گناہ ثابت ہوجائے اسکی سزا موت ہے۔ اور جو اسی ملک کا تین دفعہ وزیراعظم رہا ہو وہ غداری کا مرتکب ہو تو قانون پاکستان اسکی سزا بہتر جانتی ہے۔ نوازشریف کا اصل مقصد پاک وطن میں افراتفری ڈالنا ہے ملک کے حالات کو خراب کرنا ہے ۔ وہ چاہتے ہیں پاکستان میں الیکشن نہ ہوں کوئی راستہ مارشل لا کا ہموار ہوجائے اور ہم مظلوم بن کر ملک سے فراری اختیار کرجائیں ۔ میری چیف جسٹس آف پاکستان اور چیف آرمی سٹاف سے گذارش ہے نوازشریف پر پاکستان کے ساتھ غداری کرنے کے جرم میں جلد از جلد مقدمہ قائم کیا جائے اور انکے بھاگنے کے تمام راستے بند کردینے جائیں اس نے پاکستان کو دنیا بھر میں رسوا کرنے کی کوئی کثر نہیں چھوڑی۔۔۔۔۔۔

اپنی رائے دیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں