111

لاہور ہائیکورٹ کا وارڈنز کی جانب سے صحافیوں سے بدتمیزی اور ان کی وڈیوز بنانے کا سخت نوٹس

لاہور ہائیکورٹ

عدالت نے وارڈنز کی جانب سےصحافیوں سمیت دیگر شہریوں کی وڈیو اور تصاویر بنانے پر پابندی عائد کردی

جسٹس علی اکبر قریشی نے چیف ٹریفک پولیس آفیسر کیپٹن لیاقت کو کل طلب کرلیا

وارڈنز کا کام صرف چالان کرنا ہے بدتمیزی اور وڈیو بنانا نہیں، عدالت

عدالت کا ٹریفک پولیس پر سخت برہمی کا اظہار

کس قانون کے تحت وارڈن نے صحافیوں کی وڈیوز بنائیں، جسٹس علی اکبر قریشی

وارڈنز کی فوج ظفر موج سڑکوں پر کھڑی خوش گپیو ں میں مصروف رہتے ہیں، عدالت

صحافی ہو یا کوئی شہری کسی کی تذلیل برداشت نہیں کریں گے، عدالت

وارڈنز کا کام صرف چالان کرنا ہے اس کے علاؤہ اس کے پاس کوئی اختیار نہیں، عدالت

صحافی برادری خود کہتی ہے کہ اگر کوئی ٹریفک رولز کی خلاف ورزی کرتا ہے تو چالان کریں، عدالت

اپنی رائے دیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں