govt hospital condition 37

شیخوپورہ : تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال صفدر آباد کو ڈاکٹروں نے اپنے باپ دادا کی جاگیر بنا لیا ۔

شیخوپورہ : تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال صفدر آباد کو ڈاکٹروں نے اپنے باپ دادا کی جاگیر بنا لیا ۔

اعظم ولانہ نمائندہ انقلاب نیوز شیخوپورہ

اور جب جی آیا آ ئے حاضری لگائی چلے گئے۔

ہسپتال میں حاضری کا سسٹم ہے نہ چیک اینڈ بیلنس میڈیکل سپریٹنڈنٹ تک غیر حاضر۔

دور دراز دیہاتوں سے آنے والے مریض خواری کا شکار پرچی بنانے والا عملہ تک غائب۔

ہسپتال میں تعینات لیڈی ڈاکٹر آمنہ اسد کئی ماہ سے غائب کون کہاں ہے کسی پتہ نہیں ہے۔

ہسپتال میں دو دو ایکسرے مشینیں ہیں مگر چلانے والا کوئی نہیں۔کمروں کو تالے لگا کر بند کر دیا گیا ۔

ہسپتال کے ایڈمن احسن نے اپنی گاڑی کو جعلی سرکاری نمبر پلیٹ لگا رکھی ہے اور سرکاری ایمبولینس مریضوں کی بجائے پرائیویٹ استمعال میں ہے۔

۔ہسپتال کو ملنے والی 34 لاکھ 80 ہزار کی ایس ڈی اے اور 20 لاکھ ہیلتھ گرانٹ ایک ہی رات میں اڑن چھو ،ایل پی ،پیٹرول اور جنرل مینٹیننس کے بوگس بل بنا کر کھاتہ صاف کر دیا گیا۔

ایک ہی ہینڈ رائٹنگ سے بل بنائے اور اندراج کیا گیا مبینہ کرپشن میں اے سی صفدر آباد اور کلرک کرم الہی ملوث۔

ہسپتال کی تشویشناک صورتحال کے باوجود افسران کی حکام بالاکو سب اچھا کی رپورٹ۔۔

اپنی رائے دیں

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں