firing on ahsan iqbal 30

نارووال : وزیرداخلہ احسن اقبال پر قاتلانہ حملہ ہوا ، بازو اور پیٹ میں دو گولیاں  لگی

نارووال : وزیرداخلہ احسن اقبال پر قاتلانہ حملہ ہوا ، بازو اور پیٹ میں دو گولیاں  لگی

رپورٹ : رانا عاشق علی

واقعہ نارووال کے علاقے قصبہ کنجروڑ میں پیش آیا جہاں وزیرداخلہ احسن اقبال پر ایک کارنر میٹنگ میں شریک تھے، بتایا جاتا ہے کہ  ایم پی اے رانا منان  کے ڈیرے پر کارنر میٹنگ کے انعقاد کیا گیا تھا، کارنر میٹنگ کے اختتام پر احسن اقبال جب ڈیرے سے باہر آرہے تھے کہ اس دوران مجمع میں شریک  ایک مسلح شخص نے پستول سے  ان پر فائرنگ کردی ، ملزم نے وزیرداخلہ پر براہ راست فائرنگ کی جس سے دو گولیاں احسن اقبال کو  لگی ہیں۔
وزیرداخلہ احسن اقبال کو زخمی حالت میں فوری طور پر ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر  اسپتال منتقل کردیا گیا ہے ذراع کے مطابق ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر میں طبی سہولیات نہ ہونے کی وجہ سے لاہور سروسز ہاسپٹل میں منتقل کردیا گیا ہے تمام پروفیسر ڈاکٹرز معانہ کر رہے ہیں ایکسرے کے مطابق ایک گولی احسن اقبال کے پیٹ میں تب وہ نیچے گرپڑے تھے۔ سروسز ہاسپٹل کے اندر اور اطراف میں سیکیورٹی سخت کردی گئ ہے
دوسری جانب پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ فائرنگ کرنے والے شخص کو گرفتار کرکے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا ہے،پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم کا نام عابد حسین ہے اور اس کی عمر 21سال ہے۔
دوسری جانب پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ فائرنگ کرنے والے شخص کو نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا ھے
پولیس کی ابتدائی تفتیش کے مطابق ملزم نے اعتراف کیا ہے کہ احسن اقبال کو گولیاں اس لئے ماری گئیں انہوں نے ختم نبوت کے حوالے سے قانون بدلنے کی کوشش میں برابر کے شریک تھے۔ تمام سیاسی رہنماؤں نے اس واقعہ کی مذمت کی ہے ۔ بعض کا کہنا ہے الیکشن قریب ہیں کچھ لوگ ملک میں افرتفری پھیلانے میں مصروف عمل ہیں۔ ہم واقعہ کی سب مذمت کررہے ہیں مجھے افسوس ہورہا ہے جس ملک کا وزیرخارجہ عدم تحفظ کا شکار ہو وہاں ایک عام آدمی کی جان و مال کی حفاظت کون کریگا۔

انقلاب نیوز

اپنی رائے دیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں