farmers protest in lahore 38

پنجاب لاہور میں کسان بھائیوں کا دھرنا ، حکومت پنجاب سنجیدہ کیوں نہیں

رپورٹ : رانا عاشق علی تبسم انقلاب نیوز

حکومت پنجاب / پاکستان کسانوں کے ساتھ مذاکرات کرنے میں سنجیدہ کیوں نہیں۔۔۔
کسی بھی معاشرے میں اس کے شہری جن کے حقوق سلب کئیے جارہے ہوں وہ احتجاج یا دھرنے کے ذریعے اپنے حقوق مسائل مشکلات پریشانیاں صاحب اقتدار کی توجہ دلانے کے لئے کرتے ہیں۔
صاحب اقتدار بخوبی جانتے ہیں کیونکہ وہ اس دور سے گزرے ہوئے ہیں۔
ہمارے پاکستان میں ہر سیاسی جماعت یہ عمل بطور اپوزیشن کرچکی ہوئی ہے اور وہ اسکی ہمیت بھی سمجھ سکتی ہے۔ جب کوئی اقتدار سے باہر ہو اسے دھرنے اور احتجاج بہت اچھا لگتا ہے اور جب بادشاہت کی کرسی پر براجمان ہوتے ہیں تو سب احتجاج صحیح ہیں یا غلط انہیں برا لگنے لگتا ہے۔۔۔۔۔
ہم آتے ہیں اپنے موضوع کی طرف کچھ دنوں سے کسان بھائی پنجاب کے درالخلافہ میں احتجاج اور دھرنا دئیے ہوئے ہیں پنجاب حکومت یا وفاقی حکومت نظر انداز کئیے ہوئے ہے۔۔۔۔
کسان وہ طبقہ ہے جس کی وجہ سے روزمرہ کی ضروریات زندگی ہمیں زندہ رہنے کے لئے مہیا ہوتی ہیں۔۔۔۔۔
گندم ۔ چاول۔ گنا۔ مکئی ۔ سورج مکھی ۔ سبزیاں ۔ آلو وغیرہ یہ تمام اشیاء کسان کی مرہون منت ہیں۔۔۔۔کسان کو اس مہنگائی کے دور میں بہت کم بچت ہونے کے باوجود وہ ہماری ضرورت کو دیکھ کاشت ضرور کرتا ہے خاص طور پر اکثر چھوٹے کاشتکاروں کو دیکھا ہے وہ اللہ کی خوشنودی کے لئے کاشتکاری کرتے دکھائی دیتے ہیں۔۔۔۔۔
وہی کاشتکار کسان حضرات اپنے کچھ مطالبات لئے لاہور میں بیٹھے ہوئے ہیں مگر صاحب اقتدار آنکھیں بند کئیے ہوئے ہیں ۔۔۔۔۔جاری ہے

اپنی رائے دیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں