army public school incident 81

16 دسمبر 2014 سانحہ آرمی پبلک سکول اینڈ کالج۔۔۔۔۔

16 دسمبر 2014 سانحہ آرمی پبلک سکول اینڈ کالج۔۔۔۔۔

رپورٹ : رانا عاشق علی تبسم

ضلع سیالکوٹ سے تعلق رکھنے والے ڈوگری مسلم تحصیل ڈسکہ کے طلبہ تین حقیقی برادرز میں ایک شہید اور دوشدید زخمی ہوئے تھے ۔ شہید ہونے والے رانا خوشنود کو صدر پاکستان کی طرف سے تمغعہ شجاعت سے نوازہ گیا تھا۔

چارسال قبل سے جب سے پشاور میں معصوم شہدا مقامی ایم پی اے ۔ایم این اے تحصیل ۔ضلعی اور ڈویژن کو درخواست گزاری گئی مگر تمام انتطامیہ اور کھکھلے نعروں کے پول کھول دئیے۔ بالخصوص ایم این اے سید افتخارلحسن شاہ نے مختلف اجلاس جلسوں میں اعلان کیا کہ ہم لاری اڈا ڈسکہ کلاک ٹاور چوک کا نام تبدیل کرکے رانا خوشنود زیب شہید صدارتی تمغہ شجاعت حاصل کرنے کے نام منسوب کردیا جائے گا مگر افسوس کی بات ہے خود ہی بے معانی نعرے لگاتے اور پھر اپنی بات سے منحرف ہوجاتے ۔

شہید کے والد رانا اورنگزیب سے غائبان تعارف عرصہ دراز سے تھا مگر بالمشافہ ملاقات نہ ہوئی ۔ تین ماہ قبل شہید کے والد رانا اورنگزیب سے ملاقات کی ۔ملاقات کے دوران مذکورہ بالا حالات و واقعات رانا اورنگزیب نے تفصیل سے آگاہ کیا ۔

مجھے بےحد شرمندگی ہوئی میں نے بغیر کسی وقت ضائع کرنے چئیرمین بلدیہ ڈسکہ سے ملاقات کے دوران ہی شہید کے والد کی وساطت سے چئیرمین بلدیہ ڈسکہ خواجہ عاطف رضا پاشی نے درخواست منظور کرکے ۔ 3دن بعد تمام قانونی کاروائی مکمل کرکے کلاک ٹاور چوک کا نام تبدیل کرکے رانا خوشنود زیب شہید چوک منظور کروا دیا ۔

مگر یونٹی اینڈ پیس فورم پاکستان ضلع سیالکوٹ کے صدر کی خواہش تھی کہ افتتاح کے موقعہ پر شہید مذکور کے والدین کی شمولیت یقینی۔ کیونکہ شہید مذکور کے والد بیرون تھے جس کی وجہ سے افتتاح کی تقریب کا سبب تاخیر سے ہونا پایا۔ رانا خوشنود شہید چوک (صدارتی تمغعہ شجاعت) افتتاح 8 مئی 2018 بروز بوقت 5 بجے شام جناب چئیر مین بلدیہ ڈسکہ خواجہ عاطف رضا پاشی کریں گے۔

تمام سول سوسائٹی سیاسی ، مذہبی شخصیات کو دعوت عام دی جاتی ہے –

انقلاب نیوز

اپنی رائے دیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں